Sipah-e-Sahaba Pakistan (SSP) & Lashkar-e-Jhangvi (LeJ) & Ahle Sunnat Wal Jamaat (ASWJ) Archive

کیا سویلین-ملٹری تعلقات میں عدم توازن دکھانے سے جمہوری نظام خطرے میں پڑگیا؟ – عامر حسینی: انگریزی روزنامہ ڈان کو پاکستان پریس کونسل/پی پی سی نے سیرل المیڈا کے نوازشریف سے کیے گئے انٹرویو پہ نوٹس جاری کیا ۔ اس نوٹس پہ انسانی حقوق کمیشن برائے لاہور کی پریس ریلیز جس دن اخبار کی آفیشل
نواز شریف : دہشت گردی اور غداری کے فتوے تحریر : سید فرخ عباس: یہ نومبر 2008 ہے ، ملک پاکستان میں جرنیل مشرف کو استعفیٰ دیے تین ماہ گزر چکے ہیں، اس وقت پاکستان کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی ہیں، صدارت کا عہدہ آصف علی زرداری کے پاس ہے ، اپوزیشن
میں نے بھوک ہڑتال کیوں کی ؟ – جلیلہ حیدر ایڈوکیٹ: آج گزشتہ نو دنوں کے بعد سے بہتر محسوس کر رہی ہوں تو سوچا کہ آپ کو بتاوں کہ میرے بھوک ہڑتال کا مقصد کیا تھا اور اس کے کیا نتائج نکلا؟ 28 اپریل کو معمول کے مطابق میں
کیا خازنی کا نام بھی ہٹادوگے؟ – عامر حسینی: ابوالفتح عبدالرحمن منصور خازنی، دانشمند ایرانی و یونانی تباری بود خازنی ایرانی دانشور اور یونانی غلام تھا۔ ابومنصور ابوالفتح عبدالرحمان الخازنی ایک دم سے ہمارے معاشرے میں زیربحث آگئے ہیں۔ دیسی لبرل نے ان کو جتنا برا بھلا کہہ
گول مول موقف نہیں چلے گا – عامر حسینی: Memphes Barker میفس بارکر کے مضامین کا لب لباب بتاتا ہے کہ وہ نیولبرل ہے اور شاید یہی وجہ ہے کہ وہ برطانیہ کے ایسے اخبارات میں چھپتا ہے جو برطانیہ کی حکومتوں چاہے وہ آج کی ٹوری پارٹی
شیعہ ہزارہ نسل کشی پر فرنود عالم کی تحریر:   کوئٹہ کا قصد تھا۔ ہوائی اڈے کی انتظار گاہ میں ہزارگیوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ دو ہزارہ نوجوان وہیل چئیر پہ تھے۔ ایک نوجوان وہیل چئیر پہ ایسے بیٹھا تھا کہ ماں نے مستقل اس کی گردن
Will Pakistani Shias bid farewell to the impotence of Modernity?:   Dear #ShiaMuslims of Pakistan, you are being targeted across the length and breath of the country, especially Quetta and D I Khan. If you are still deluded that Pakistan’s #CommercialLiberalMafia will support you and HONESTLY highlight your cause,
دیسی لبرل کی مخصوص سیاپا فروشی بے نقاب – عامر حسینی: چوبرجی پہ موجود دیوبندی مدرسہ اور اورنج لائن ٹرین اور پنجاب یونیورسٹی کی زمین کا قصّہ اورنج لائن ٹرین منصوبے کے لیے جو راستا وضع کیا گیا تھا اس میں پہلے حافظ پروفیسر سعید بانی لشکر طیبہ/جماعت دعوہ کے
Media in Chains – by Peja Mistry:     It was early 2007, Musharraf was ruling without any major problems. There was very little resistance against him in electronic media and on roads. In the electronic media there were several very popular shows including Dr. Shahid
انقلاب کا مدفن (کہانی) – عامر حسینی: دن ڈھل چکا تھا۔ شام کے سائے گہرے ہورہے تھے۔ دور مغرب میں سورج تانبے جیسا زرد ہوکر ڈوبنے کو تیار تھا۔مغربی افق کے کنارے پہ سرخی پھیلی ہوئی تھی۔ایسے لگتا تھا جیسے مغربی افق پہ کسی کا ماتم
دیوبندی مکتب فکر میں جہاد و تکفیر اور پشتون و پنجابی فیکٹر – عامر حسینی: فرنود عالم نے ایک پوسٹ افغان اور کشمیر جہادی پروجیکٹس اور پاکستان میں دیوبندی ریاست کے لیے ہتھار اٹھانے والے پروجیکٹس کی ساخت کے بارے میں لگائی ہے۔اور اس پوسٹ میں انہوں نے یہ کہنے کی کوشش کی ہے
پشتون اور پرائی جنگ – ہارون وزیر: تمام تر باتوں کا ایک متوقع جواب یہ ملے گا کہ طالبان کس نے بنائے. 33 بلین ڈالر کس نے لئے. علی وزیر کے خاندان کے 13 افراد قتل کئے گئے ہیں وغیرہ اور یہ کہ آپ کبھی وزیرستان
پشتون تحفظ مومنٹ، /تحفظات و سوالا – حیدر جاوید سید: منظور پشتین کی پشتون تحفظ موومنٹ کی ابتداء سے اب تک دوستوں اور سوشل میڈیا کے ساتھیوں کے اصرار کے باوجود لکھنے سے معذرت کرلی۔ چند احباب مصر ہوئے تو عرض کیا کچھ تحفظات مانع ہیں لکھنے میں۔ عزیز
Is Pakstan really in the Post-Taliban Era?:     The following rhetorical questions have been raised by sections of Pakistan’s “intelligentsia” and/or Commercial Liberals and need to be addressed. Are we really living in an era where the existential threat from the Taliban has receded? Has
پشتون سماج میں اینٹی شیعہ ازم کمپئن آئی ایس آئی کی پیداوار نہیں ہے, فرحت تاج – عامر حسینی: منظور احمد پشتین اور علی وزیر کے دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک کے دورے پہ معروف ماہر پشتون تاریخ اور دانشور فرحت تاج نے ‘اختلافی نوٹ’ کے عنوان سے اپنے خیالات کا اظہار فیس بک پہ اپنی وال پہ کیا۔انہوں
منظور پشتین کو مدرسہ حقانیہ نہیں جانا چاہیے تھا؟ – محمد عامر حسینی: پشتون تحفظ تحریک کے کنوینر منظور محسود پشتون عرف منظور پشتین اور وزیر قبائل کے علی وزیر نے دار العلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک کا دورہ کیا اور مدرسے سے اپنی تحریک کے لیے حمایت طلب کی ہے۔ اس دورے
کیا ہم پوسٹ طالبان دور میں پہنچ گئے ہیں؟ – محمد عامر حسینی: کیا ہم پوسٹ طالبان دور میں پہنچ گئے ہیں؟ کیا تکفیری دیوبندی ریڈیکل ازم اپنے زوال کو پہنچا اور اس کی جگہ صوفی بریلوی ریڈیکل ازم نے لے لی ہے؟ کیا پاکستان کی ریاست فرقہ وارانہ شناخت کی تبدیلی
یمن پہ مسلط جنگ اور میڈیا ڈسکورس – عامر حسینی: تین اپریل 2018ء کو سعودی عرب کی قیادت میں بنے فوجی اتحاد کے طیاروں نے یمن کے ساحلی شہر الحدیدہ میں داخلی مہاجرت اور بے دخلی کا شکار یمنیوں کے لیے بنے ہوئے ایک کیمپ پہ مزائیل داغے۔اس فضائی
قندوز مدرسہ پہ حملہ اور ہمارا موقف – عامر حسینی: افغانستان کا صوبہ قندوز اور ڈسٹرکٹ دشت آرچی کا ایک گاؤں جہاں پہ ایک مدرسہ میں سالانہ جلسہ تقسیم دستار فضیلت و اسناد درمیان حفاظ کرام کا انعقاد ہورہا تھا۔قندوز کے اس ڈسڑکٹ کا اکثر علاقہ تحریک طالبان اقغانستان
“Spread of Wahhabism was done at the Request of West” – Saudi despot, Ibne Salman.:   Proving once again that Wahhabi Fascism and Western “Civilization” are inextricably linked since the Lutheran-Calvinist doctrine of puritanical literalism. In 1802, when Wahhabi hordes attacked Karbala, Karl Marx was not even born! British imperialists backed Wahhabi terrorists in
In denying Malala the credit she deserves, we belittle ourselves:   Malala stood for up for education and the rights of female students since 2009-10. Those were the dark days when the Pakistani State was in retreat in front of the Takfiri sectarian terrorists of the Taliban. During that
منافقت اور کسے کہتے ہیں؟ – عامر حسینی: پنجاب حکومت کرکٹ بچانے پہ اربوں خرچ کرتی ہے اور عر س و میلوں کی ثقافت برباد کرنے کے لیے حضرت سخی سرور کا مزار سیل کرکے تاریخی میلے پہ پابندی عائد کردیتی ہے اور زائرین پہ پولیس بدترین
Obfuscating report on Agonies of Shia-Hazra community by NHCR – Aamir Hussaini:     Not Understanding of Agonies of Hazara community but spreading more obfuscation Recently National Commission for Human Rights in Pakistan has released a report titled”Understanding the Agonies of Ethnic Hazaraz”. Title of this report skips Shia identity of
مذہبی جنونیت کا ہوا کھڑا کرنے میں نواز حکومت اور اس کا حامی کمرشل لبرل مافیا ملوث ہے – عامر حسینی: تحریک لبیک یارسول اللہ کے اسلام آباد دھرنے پہ آئی ایس آئی نے جو رپورٹ سپریم کورٹ آف پاکستان کے سامنے جمع کرائی، اس رپورٹ سے یہ بات کھل کر سامنے آتی ہے کہ اسلام آباد میں اس دھرنے
سبط جعفر جیسے استاد قتل کیوں ہوجاتے ہیں – عامر حسینی: آج اٹھارہ مارچ 2018ء ہے۔اور آج سے پانچ سال پہلے اسی دن پروفیسر سبط جعفر پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج لیاقت آباد(لالو کھیت) کراچی اپنی موٹر سائیکل پہ گھر واپس لوٹ رہے تھے کہ ایک سپیڈ بریکر ان کی بائیک
پشتون تحفظ تحریک اور بہار پشتون:   پشتون تحفظ موومنٹ-پی ٹی ایم کے نام سے اس وقت خیبرپختون خوا اور فاٹا کے پشتون بولنے والی نوجوانوں کی ایک سماجی تحریک سامنے آئی ہے۔پی ٹی ایم کا چہرہ اس وقت منظور پشتین نام کا ایک نوجوان
شام کا معاملہ کیا ہے؟ – عثمان قاضی: نوٹ :یو این ڈی پی کے لبنان میں ایڈوائزر عثمان قاضی شام گئے تھے اس لئے شام کے معاملے میں وہ چشم دید گواہ کی حیثیث رکھتے ہیں۔ باغیوں کا آخری ٹھکانا دمشق کے مرکز سے چھ کلومیٹر پر
A House divided:       Editor’s Note : DAWN’s report on the the Tableeghi Jamaat, a Deobandi evangelist outfit and a gateway (for some) to hardcore Takfiri groups, is an example of poor reporting. The report is too partisan to the
The cliched and sectarian lens applied by some Pakistanis to Syria is an unfortunate extension of their own prejudice:   For decades, Pakistan’s liberals misrepresented the actual ground reality of Deobandi militancy against all other faiths and sects. “Oh it is a 1400 year old war between the House of Prophet Mohammad and the House of Yazeed”. Often
شام و یمن پہ جہادیوں کی پریشانی – عامر حسینی: ایک غیر ملکی غیر جانبدار تجزیہ کار کی اپنی رائے یہ ہے غوطہ شہر میں اس وقت عسکریت پسندوں اور شامی فوج کے درمیان لڑائی میں سوائے لڑائی کے اور کوئی راستا اس لئے نہیں بچا کہ عسکریت پسندوں
Death Anniversary of Shahbaz Bhutti: Tahir Ashrafi and a biased section of Liberal Press:     Friday, March 2nd is the death anniversary of #ShahbazBhatti who was killed by the #takfiriDeobandi terrorists affiliated with the #Taliban. Bhatti was a minister in the previous PPP government and Tahir Ashrafi, a Deobandi hate monger had
The observations of a Non-Partisan foreigner currently in Syria:   The government is rumoured to have launched a ground offensive on the besieged enclave of Eastern Ghouta this morning, after a few weeks of aerial bombing. The militants holed up in the enclave have fired hundreds of mortars
Pakistan should not borrow the Jamaat e Islami narrative for its foreign policy on Syria:   If anyone dares to differ from the ridiculous Pro – Al Qaeda Script on Syria, they are branded as “Putin puppets”. Those who don’t tow the Jamaat e Islami and Sipah Sahaba line on Syria are abused on
نفسیاتی جنگ – ابوالقاسم فردوسی طوسی: شیکسپیئر کا شہرۂ آفاق قول ہر زمانے میں کیلیے ہے، ”محبت اور جنگ میں سب جائز ہے”۔۔۔ پروپیگنڈا کا پہلا اصول ہوتا ہے جھوٹ اور سچ کو خلط ملط کرکے ایک ایسا بیانیہ تیار کرنا جس سے اصل اور
Nawaz Sharif: a Victim of his own Dirty schemes and Avarice:   For four decades, Nawaz Sharif collaborated and schemed against democracy in Pakistan. He collaborated with over-ambitious generals and military dictators. Dirty and corrupt PCO judges like Iftikhar Chaudhary, Ramday and Saeed uz Zaman Siddiqui knew that they could
پاکستان کے لبرل انگریزی پریس میں کمرشل ازم کا بڑھتا رجحان – عامر حسینی: پاکستان میں لبرل پریس سیکشن پہ کمرشل ازم کا غلبہ اس قدر زیادہ ہوگیا ہے کہ اب یہ اپنی لبرل اقدار کو بری طرح سے پامال کرتا ہے۔ جنگ-نیوز میڈیا گروپ سے وابستہ اور ایسے ہی فرائیڈے ٹائمز کی
بلوچ ـ مذہبی شدت پسندی – ذوالفقار علی ذوالفی: بلوچستان میں ہزارہ برادری کی نسل کشی میں ملوث افراد کی اکثریت ، جامعہ حفصہ اسلام آباد کے سربراہان غازی عبدالرشید و مولانا عبدالعزیز اور سیہون دھماکے کے ماسٹر مائنڈز ڈاکٹر غلام مصطفی مزاری، صفی اللہ مزاری اور نادر
لعل شہباز قلندر کے مزار پہ بم دھماکے میں تکفیری دیوبندی خطیب لال مسجد کے رشتے دار ملوث ہیں – سندھ پولیس/ رپورٹ بی بی سی اردو: قلندر کے لعل شہباز کے مزار پر خودکش بم حملے میں 87 افراد ہلاک جبکہ 329 زخمی ہوئے تھے سندھ کے صوفی بزرگ لعل شہباز قلندر کے مزار پر خودکش حملے میں لال مسجد اسلام آباد کے خطیب مولانا
Asma Jahangir and pseudo liberalism – by Peja Mistry:     There is no denying the fact that Asma Jahangir was one of the most resounding voice against the military dictatorship and military generals who would not accept civilian & constitutional rule. When she would roar on television
An Independent Journalist remembers Asma Jehangir:   Editor’s note: Our memories of Asma Jehangir go back to the period between 1970-1999 when she stood up to the Sipah Sahaba mobs and protected their rights of our Pakistani Christian comrades. To raise voice for victims of