Urdu Articles Archive

ڈیرہ اسماعیل خان: ٹارگٹ کلنگ کا سلسلہ کب رکے گا؟ – محمد عامر حسینی: آٹھ اگست 2018ء کی صبح ڈیرہ اسماعیل خان کے علاقے پروآ میں تین گھرانوں کے لیے قیامت کا پیام ثابت ہوئی۔باقر حسین عربی مسجد کے قریب پہنچا جس کے ساتھ ہی پروآ تھانہ ہے تو موٹر سائیکل سوار دو
شیعہ نسل کشی : متاثرین کے نکتہ نظر سے تکفیریت کا جائزہ:   نوٹ:میں 8 سال سے شیعہ نسل کشی اور اس کے تکفیریت سے باہمی رشتے کا باقاعدہ طور پہ جائزہ لیتا آرہا ہوں ۔ اس دوران مجھے صرف پاکستانی لبرل اسٹبلشمنٹ اور انتہا پسند مذہبی دایاں بازو سے نبرد
جنوبی ایشیا میں داعش اور بہار جنوبی ایشیا کیا واقعی سنجیدہ چیلنج ہیں؟ – عامر حسینی: افغانستان میں طالبان اور داعش کے درمیان دو ماہ سے جاری جھڑپوں میں 100 سے زائد طالبان مارے گئے جبکہ داعش کے بھی کئی لوگ ہلاک۔ شمالی افغانستان کے صوبہ جوزجان اور صوبہ سری پل میں طالبان اور داعش
بی بی سی ہارڈ ٹاک کے میزبان نے حمید ہارون سی او ڈان میڈیا گروپ کی جانبداری کا پول کھول دیا: ڈان میڈیا گروپ کے سی ای او حمید ہارون نے حال ہی میں بی بی سی کے پروگرام ہارڈ ٹاک میں شرکت کی۔اس پروگرام کے میزبان بی بی سی کے صحافی سٹیفن سیکر تھے۔ حمید ہارون سے بات چیت
ڈان میڈیا گروپ غیر جانبداری اور نیوٹرل صحافت چھوڑ کر نواز شریف اور مریم نواز کا حمائتی کیوں بن گیا ہے؟:       https://www.bbc.co.uk/programmes/w3cswj8p Bottom line is, now come back to, you the self-proclaimed independent, impartial and neutral media group covering Pakistan and now seen to be supportive and sympathetic to Nawaz Sharif and his daughter Maryam Nawaz Sharif,
یو ٹرن لے لیں – نعمان یاور: اعلان، خبریں، تجزیے پڑھنے کے بعد لگ رہا تھا کہ نواز شریف کی وطن واپسی، گرفتاری سے پہلے ممکنہ طور پر کارکنوں سے خطاب اور پھر جیل جانا، یہ ایک بڑی خبر ہوگی اور حقیقت بھی یہی ہے۔ اخبارات
ایون فیلڈ ریفرنس فیصلہ : آزاد قانونی حلقے اور غیر جانبدار تجزیہ نگار کتنے غیر جانبدار اور آزاد ہیں؟ – عامر حسینی: پاؤں پھنسا ہے یار کا زلف دراز میں احتساب عدالت اسلام آباد کے جج بشیر احمد نے ایون فیلڈ اپارٹمنٹ کیس میں میاں نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر نواز کو بالترتیب دس سال، آٹھ سال اور سات سال
پاکستان کی لبرل میڈیا اسٹیبلشمنٹ کی ضیاءالحق گردی – عامر حسینی: مبشر زیدی ڈان نیوز ٹی وی اور روزنامہ ڈان سے وابستہ پاکستان کے لبرل اشراف صحافیوں میں سے ایک ہیں۔ پہلا ٹوئٹ آیا کہ ان کو کسی کے مذھبی عقائد سے کچھ لینا دینا نہیں ہے۔مگر عمران خان کا
whispers of how Patwari Media has infiltrated VOA, DW, BBC, DAWN etc:   Seems like Alternative Chirriyas are chirping to us about Pakistan’s media scene. There are growing whispers of how Patwari Media has infiltrated VOA, DW, BBC, DAWN, Yahoo News and the New York Times. One can see a clear
شہید بھٹو پہلی وزیراعظم خاتون تھیں جو وزیراعظم ہوتے ہوئے بچے کی پیدائش کے عمل سے گزریں۔ تحریر : خالد عمر ترجمہ – عامر حسینی:   شہید بھٹو پہلی وزیراعظم خاتون تھیں جو وزیراعظم ہوتے ہوئے بچے کی پیدائش کے عمل سے گزریں۔ کچھ اتفاقات بہت دلچسپ ہوتے ہیں تحریر : خالد عمر ترجمہ عامر حسینی اکیس جون بے نظیر بھٹو کا جنم دن
Sunni tribes start returning to Parachinar 11 years after displacement:   Elders of Shia community and Turi-Bangash tribes organized a welcome ceremony for them. In a major development, scores of Sunni tribal families have been repatriated to their homes in Parachinar, the main town of Kurram tribal district of
اسرائیلی فوج نے اپنا الحاج شیخ الاسلام متعارف کرادیا – عامر حسینی: اسرائیل، اور سعودی عرب کی باہمی قربتوں کا احوال تو کسی سے چھپا ہوا نہیں ہے۔لیکن آج کل سعودی عرب کے فرمانروا نے ایران بارے اپنا معاندانہ رویہ ‘شیعہ مخالف بیانات’ کی بجائے صرف ‘ ایران کے غلبے کا
مسلم لیگ نواز اور نادرا چئیرمین کے مبینہ ساز باز کی کہانی: سماء ٹی وی پہ اینکر پرسن مبشر لقمان کے ٹاک شو ‘ کھرا سچ’ کا 13 جون 2018ء کا پروگرام ضرور دیکھنا چاہیے۔ اگرچہ مبشر لقمان نے اس پروگرام میں جو شواہد پیش کیے ہیں وہ ان کے اس
اداریہ تعمیر پاکستان: الیکشن کمیشن پاکستان راہ حق پارٹی کی رجسٹریشن منسوخ کرے: ملی مسلم لیگ کو الیکشن کمیشن پاکستان نے یہ کہہ کر سیاسی جماعت کے طور پہ درج کرنے سے انکار کیا کہ اس کے سربراہ کے حافظ سعید سربراہ جماعت دعوہ سے مبینہ تعلقات ہیں۔ اور یہ جماعت دعوہ
’علاقے کی معیشت بابا فرید کے دربار سے جڑی ہے‘: پاکستان میں کئی لوگوں کے لیے مزاروں کی مذہبی اہمیت ہے لیکن ملک کے کئی شہروں، قصبوں اور دیہات میں یہ مزار وہاں کی معیشت، سیاست اور ثقافت سے بھی منسلک ہیں۔ تین قسطوں پر مشتمل اِس سیریز میں
پاکستان کے ’لاپتہ‘ شیعہ کہاں ہیں؟: کراچی کی ایک مقامی مسجد پر نگرانی کے لیے نصب کیمروں کی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ درجن کے قریب مسلح افراد 30 سالہ نعیم حیدر کو ہتھکڑیاں لگا کر لے جا رہے ہیں۔ان میں سے بعض
خاص قسم کی وائلنس پہ چپ کیوں لگ جاتی ہے؟ – عامر حسینی: آج 31مئی 2018ء ہے۔ اسی دن 14 سال پہلے کراچی میں امام بارگاہ علی رضا پہ خودکش بم دھماکہ کیا گیا تھا۔اس واقعے میں اٹھارہ شیعہ مسلمان نمازی جاں بحق ہوئے اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔ جبکہ اسی تین
اداریہ تعمیر پاکستان: امتیاز اور فرق پہ مبنی سیاپا فروشی بند ہونے تک چرن جیت سنگھ قتل ہوتے رہیں گے: ملک بھر میں مذہبی ہم آہنگی اور امن و آشتی کے لیے کام کرنے والے بزرگ سردار چرن جیت سنگھ کو آج پشاور میں اسکیم موڑ کے نزدیک ‘نامعلوم’ حملہ آوروں نے فائرنگ کرکے قتل کردیا۔ سردار چرن جیت
تکفیری فاشزم ، مفہوم ، اصطلاح اور رد – عامر حسینی: نوٹ: یہ مضمون میں نے مارچ 2015ء میں تحریر کیا تھا۔آج مئی 2018ء ہے۔ مجھے افسوس اس بات کا ہے کہ اہل تشیع اور اہل سنت کے اندر ایسے افراد موجود ہے جو تکفیری فاشزم کو اب بھی جیو
شعیب میر : ایک جیالا خلاق فطرت نہ رہا – عامر حسینی: میں تحصیل کبیروالا ،ضلع خانیوال کے نواحی چک 20 وہنوئی میں ایک دوست کے ہاں افطار کی دعوت پہ آیا ہوا تھا۔ہم کھتیوں کے سامنے بنے دوست کے گھر کے سامنے چارپائیوں پہ بیٹھے تھے۔میرے ساتھ محمد امین وارثی
کیا سویلین-ملٹری تعلقات میں عدم توازن دکھانے سے جمہوری نظام خطرے میں پڑگیا؟ – عامر حسینی: انگریزی روزنامہ ڈان کو پاکستان پریس کونسل/پی پی سی نے سیرل المیڈا کے نوازشریف سے کیے گئے انٹرویو پہ نوٹس جاری کیا ۔ اس نوٹس پہ انسانی حقوق کمیشن برائے لاہور کی پریس ریلیز جس دن اخبار کی آفیشل
نواز شریف : دہشت گردی اور غداری کے فتوے تحریر : سید فرخ عباس: یہ نومبر 2008 ہے ، ملک پاکستان میں جرنیل مشرف کو استعفیٰ دیے تین ماہ گزر چکے ہیں، اس وقت پاکستان کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی ہیں، صدارت کا عہدہ آصف علی زرداری کے پاس ہے ، اپوزیشن
میں نے بھوک ہڑتال کیوں کی ؟ – جلیلہ حیدر ایڈوکیٹ: آج گزشتہ نو دنوں کے بعد سے بہتر محسوس کر رہی ہوں تو سوچا کہ آپ کو بتاوں کہ میرے بھوک ہڑتال کا مقصد کیا تھا اور اس کے کیا نتائج نکلا؟ 28 اپریل کو معمول کے مطابق میں
کیا خازنی کا نام بھی ہٹادوگے؟ – عامر حسینی: ابوالفتح عبدالرحمن منصور خازنی، دانشمند ایرانی و یونانی تباری بود خازنی ایرانی دانشور اور یونانی غلام تھا۔ ابومنصور ابوالفتح عبدالرحمان الخازنی ایک دم سے ہمارے معاشرے میں زیربحث آگئے ہیں۔ دیسی لبرل نے ان کو جتنا برا بھلا کہہ
شیعہ ہزارہ نسل کشی پر فرنود عالم کی تحریر:   کوئٹہ کا قصد تھا۔ ہوائی اڈے کی انتظار گاہ میں ہزارگیوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ دو ہزارہ نوجوان وہیل چئیر پہ تھے۔ ایک نوجوان وہیل چئیر پہ ایسے بیٹھا تھا کہ ماں نے مستقل اس کی گردن
دیسی لبرل کی مخصوص سیاپا فروشی بے نقاب – عامر حسینی: چوبرجی پہ موجود دیوبندی مدرسہ اور اورنج لائن ٹرین اور پنجاب یونیورسٹی کی زمین کا قصّہ اورنج لائن ٹرین منصوبے کے لیے جو راستا وضع کیا گیا تھا اس میں پہلے حافظ پروفیسر سعید بانی لشکر طیبہ/جماعت دعوہ کے
مدیحہ گوہر کے گزرجانے پہ جی بہت اداس ہے – ریاض ملک: اسّی کی دہائی کے تاریک ترین دور میں جب امریک کا حمایت یافتہ آمر جنرل ضیاء الحق شہری و سیاسی حقوق پامال کررہا تھا تو مدیحہ گوہر بھی مزاحمت کے چند بڑے ناموں میں سے ایک تھیں۔ ( کیونکہ
یمن کی کسی کو پرواہ نہیں ہے – عامر حسینی: انیس اپریل کی شام سعودی طیاروں نے یمن کے صوبہ حاج کے دارالحکومت میں ایک شادی کی تقریب پہ مزائیل برسائے جس میں دلہن سمیت 20 افراد ہلاک ہوئے۔ مرنے والوں میں زیادہ تعداد عورتوں اور بچوں کی تھی۔
مجھے دکھ ہے کہ بے گناہی ثابت کرنے کے لئے 14 ماہ زندان میں گزارے، ثمر عباس – از فواد حسن: “مجھے اس بات کا دکھ ہے کہ اس ریاست کو 14 مہینے مجھے زندان میں ڈال کر مجھے بے گناہ ثابت کرنا پڑا۔ یہ سب شاید مجھے لاپتہ کئے بغیر بھی کیا جاسکتا تھا”۔ ایسا کہنا ہے ثمر عباس
کیمائی گیس حملہ کا فسانہ – رابرٹ فسک: The search for truth in the rubble of Douma – and one doctor’s doubts over the chemical attack ڈوما کے ملبے میں سچائی کی تلاش۔۔۔۔۔۔۔ اور کیمیائی حملے پہ ایک ڈاکٹر کے شبہات مڈل ایسٹ میں ہونے والی جنگوں
میں شام پہ غیر جانبدار نہیں ہوں – عامر حسینی: کچھ دوستوں کی جانب سے مجھ پہ ‘شام اور بشار الاسد’ کے معاملے پہ جانبداری برتنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔یہ بھی کہا گیا کہ میں ایران نواز ہوں۔ میں اس تنقید کا خیرمقدم کرتا ہوں۔ اس لیے
انقلاب کا مدفن (کہانی) – عامر حسینی: دن ڈھل چکا تھا۔ شام کے سائے گہرے ہورہے تھے۔ دور مغرب میں سورج تانبے جیسا زرد ہوکر ڈوبنے کو تیار تھا۔مغربی افق کے کنارے پہ سرخی پھیلی ہوئی تھی۔ایسے لگتا تھا جیسے مغربی افق پہ کسی کا ماتم
دیوبندی مکتب فکر میں جہاد و تکفیر اور پشتون و پنجابی فیکٹر – عامر حسینی: فرنود عالم نے ایک پوسٹ افغان اور کشمیر جہادی پروجیکٹس اور پاکستان میں دیوبندی ریاست کے لیے ہتھار اٹھانے والے پروجیکٹس کی ساخت کے بارے میں لگائی ہے۔اور اس پوسٹ میں انہوں نے یہ کہنے کی کوشش کی ہے
شامی جنگی ڈرامے کا مرکزی ولن کون؟ – ولادیمر گولیسٹن: نوٹ : روسی نژاد پروفیسر کا تجزیہ ہمیں وہاں سے چيزوں کو دکھاتا ہے جہاں سے دیکھنے کے لیے دماغ کی بند کھڑکیوں کو کھولنا بہت ضروری ہے۔پاکستان میں دیسی لبرل صحافت بھی اتنی بنجر اور گھٹیا سی کیوں
پشتون اور پرائی جنگ – ہارون وزیر: تمام تر باتوں کا ایک متوقع جواب یہ ملے گا کہ طالبان کس نے بنائے. 33 بلین ڈالر کس نے لئے. علی وزیر کے خاندان کے 13 افراد قتل کئے گئے ہیں وغیرہ اور یہ کہ آپ کبھی وزیرستان
پشتون تحفظ مومنٹ، /تحفظات و سوالا – حیدر جاوید سید: منظور پشتین کی پشتون تحفظ موومنٹ کی ابتداء سے اب تک دوستوں اور سوشل میڈیا کے ساتھیوں کے اصرار کے باوجود لکھنے سے معذرت کرلی۔ چند احباب مصر ہوئے تو عرض کیا کچھ تحفظات مانع ہیں لکھنے میں۔ عزیز
Is Pakstan really in the Post-Taliban Era?:     The following rhetorical questions have been raised by sections of Pakistan’s “intelligentsia” and/or Commercial Liberals and need to be addressed. Are we really living in an era where the existential threat from the Taliban has receded? Has
پشتون سماج میں اینٹی شیعہ ازم کمپئن آئی ایس آئی کی پیداوار نہیں ہے, فرحت تاج – عامر حسینی: منظور احمد پشتین اور علی وزیر کے دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک کے دورے پہ معروف ماہر پشتون تاریخ اور دانشور فرحت تاج نے ‘اختلافی نوٹ’ کے عنوان سے اپنے خیالات کا اظہار فیس بک پہ اپنی وال پہ کیا۔انہوں
منظور پشتین کو مدرسہ حقانیہ نہیں جانا چاہیے تھا؟ – محمد عامر حسینی: پشتون تحفظ تحریک کے کنوینر منظور محسود پشتون عرف منظور پشتین اور وزیر قبائل کے علی وزیر نے دار العلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک کا دورہ کیا اور مدرسے سے اپنی تحریک کے لیے حمایت طلب کی ہے۔ اس دورے
کیا ہم پوسٹ طالبان دور میں پہنچ گئے ہیں؟ – محمد عامر حسینی: کیا ہم پوسٹ طالبان دور میں پہنچ گئے ہیں؟ کیا تکفیری دیوبندی ریڈیکل ازم اپنے زوال کو پہنچا اور اس کی جگہ صوفی بریلوی ریڈیکل ازم نے لے لی ہے؟ کیا پاکستان کی ریاست فرقہ وارانہ شناخت کی تبدیلی