جنرل بلال تکفیری دیوبندیوں کے آستانے پر

13076830_10206876870340092_9150718399339515862_n

 

ایک ایسا مدرسہ جس کے مدرس، مہتمم اعلی اور مفتی (نظام الدین شامزئی) نے کھلے عام یہ فتوی دیا ہو کہ افغانستان پر ہونے والے امریکی حملے میں شرکت اور معاونت کے سبب پاکستان حکومت اور پاکستانی فوج کافر ہو گئی ہے، جو طالبان کا اور جہاد کے نام پر دہشتگردی کا سب سے بڑا حامی ہو، جس کے سب سے بڑے مفتی (ولی حسن ٹونکی و یوسف لدھیانوی) نے شیعہ مسلمانوں کو کافر مرتد کہا ہو-

جو طالبان سے جنگ کے دوران شہید ہونے والے فوجیوں کی نماز جنازہ پڑھنے کو جائز نہیں سمجھتے، ڈی جی رینجرز جنرل بلال دہشتگردی اور انتہا پسندی کے اس مرکز پر کیا کرنے گئے تھے ؟ یہ وجہ ہے کہ شہر کراچی میں رینجرز کی ذمہ داری جن کالعدم تکفیری دہشتگرد گرہوں کے خلاف کاروائی کرنے کی ہے وہی دہشتگرد گروہ اسی رینجرز کے حق میں ریلیاں نکالتے ہیں ؟ کیا وجہ ہے کہ ان تکفیری دہشتگرد گروہوں کے کسی مرکز پر آج تک رینجرز نے چھاپہ نہیں مارا ؟

کب تک ان تکفیری دہشتگردوں کی سرپرستی یہ قانون نافذ کرنے والے ادارے کرتے رہیں گے َ؟ جنرل بلال صاحب، جان کی امان پاؤں تو عرض کروں کہ نیشنل ایکشن پلان، تحفظ پاکستان ایکٹ ان تکفیری دہشتگردوں کی سرپرستی کے لیئے نہیں ان کے خلاف ایکشن لینے کے لیئے بنایا گیا تھا۔

Comments

comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


*