جماعت اسلامی اور لشکر جھنگوی کی مشترکہ سوشل میڈیا ٹیم مشعل کا تاریک چہرہ بے نقاب

21 22 24 25 26 27 28 30

جھوٹ، منافقت، قول و فعل کے تضاد اور غلط بیانی کو اگر مجسم صورت میں دیکھنا ہو تو آپ صرف جماعت اسلامی اور اسکے غنڈوں کو دیکھ لیں۔ یہ وہی لوگ ہیں جو مقتول سے تعزیت بھی کرتے ہیں اور قاتل کی وکالت بھی کرتے ہیں۔ یہ حکیم اللہ محسود نامی پاکستان کے دشمن کو شہید کہتے ہیں اور پھر بے شرمی کی انتہاوں کو چھوتے ہوئے پاکستان کے حق میں ریلیاں بھی نکالتے ہیں۔ یہ پشاور طالبان کے ہاتھوں ذبح ہونے والے بچوں کی غائبانہ نماز جنازہ بھی پڑھتے ہیں اور طالبان کے مرداروں کے جنازے بھی پڑھاتے ہیں۔ یہ شکار پور امام بارگاہ میں لشکر جھنگوی سپاہ صحابہ کے حملے کے بعد وہاں ٹسوے بہانے بھی پہنچ جاتے ہیں اور احمد لدھیانوی کے ساتھ مل کر دفاع پاکستان اور الیکشن ریلیاں بھی نکالتے ہیں۔ ان ظاہر کچھ اور ہے، انکا باطن انتہائی بھیانک ہے۔ یہ پاکستان میں قتل ہونے والے ۸۰،۰۰۰ پاکستانیوں کے قاتل طالبان کے خلاف ایک لفظ نہیں بولتے لیکن برما کیلئے آسمان سر پر اُٹھا لیتے ہیں۔ یہ منجن اتحاد بین المسلمین کا بیچتے ہیں لیکن انکے لونڈے سوشل میڈیا پر شیعہ نفرت کی تمام حدیں عبور کرتے نظر آتے ہیں۔ انکے لونڈے سپاہ صحابہ لشکر جھنگوی کے میڈیا سیل چلاتے ہیں اور انکے ترجمان ڈھٹائی سے آکر تردید کر کے چلے جاتے ہیں۔

ان منافقوں پر مزید الفاظ ضائع نہیں کرینگے۔ بس پرانی چند باتیں دہرا دیں۔

ہم اس بات کو دوبارہ دہراتے ہیں کہ فیسبک پر مشعل نامی تکفیری پیج جماعت اسلامی کے شمس الدین امجد، اسد آصف اور دیگر لونڈوں کے زرئعے چلایا جا رہا ہے۔ اس پیج پر شہید خرم زکی کے خلاف ایک عرصے تک انتہائی زہر آلود پراپگنڈا کیا جاتا رہا جبکہ شیعہ مخالف پوسٹس اسکے علاوہ ہیں۔ امیر العظیم صاحب جوتوں سمیت آنکھوں میں مت گھسیں اور خود کو نوشیر وان عادل کا جانشین ظاہر کرنے کا ڈرامہ مت کریں۔ خرم زکی شہید کے خلاف مشعل نامی تکفیری پیج سے جو اول فول بکا جاتا رہا، اس کے پیچھے کوئی اور نہیں اپکی جماعت اسلامی کے لونڈوں کا ہاتھ ہے۔

مثال کیلئے چند تصویریں شئیر کر رہے ہیں، غور سے دیکھیں آپکا لونڈا اسد واصف کیسے مشعل اور جماعت اسلامی کو ساتھ ساتھ چلا رہا ہے۔

نوٹ: ہم اپنے پڑھنے والے قارئین سے بھی گذارش کرینگے کہ اس پوسٹ کو زیادہ سے زیادہ شئیر کریں تاکہ ان جماعتیوں کی نسلی منافقت اور بے غیرتی سب پر مزید عیاں ہوجائے۔ شئیر کرتے وقت قاتل قاتل شمس الدین امجد قاتل کہنا اور نام نہاد جماعت اسلامی پر لعنت بھینا مت بھولیں

Comments

comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


*