شیعہ نسل کشی اور جعلی لبرلز – زالان

13138806_10207964969736621_4663741993289248566_n

 

کچھ دو نمبر لبرلز اور جعلی ملحدین کے نزدیک دیوبندی دہشتگردی کی غیر مشروط مذمت صرف جب ہوتی ہے جب وہ اہل تشیع کے علاوہ کسی اور پر حملے کریں،شیعوں پر حملہ ہوگا تو یہ مذہبی جنگ قرار دینگے

جب طالبان نے پشاورسکول یا لاہور داتا دربار پر حملہ کیا تو شیعہ سنی کی بحث نہیں ہوئی، اور یہی طالبان و سپاہ صحابہ کے دیوبندی جب شیعوں کو قتل کرتے ہیں تو بعض بد دیانت لوگ مذہبی اختلافات لا کر طالبان کو بچاتے ہیں

دیوبندی طالبان نے بازار سے لے کر سکولوں پر حملے کئیے ، مگر جب شیعہ کو قتل کرتے ہیں تو کچھ دو نمبر لبرل اسے شیعہ سنی مسلہ بنا کر طالبان کی سپورٹ کرتے ہیں جب دیوبندی بازاروں، اسکولوں اور پبلک مقامات پر حملے کرتے ہیں تو لوگ دہشتگردی کہتے ہیں اور جب شیعوں پر حملہ کرتے ہیں تو یہ شیعہ سنی لڑائی کیوں کہلاتی ہے؟

22 23 24 25

Comments

comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


*