کراچی میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن اور رینجرز کا دہرا معیار – از خرم زکی

11263005_10205129511337209_1611695001484134076_n

 

میں کراچی میں جس دہرے معیار کی بات کرتا ہوں اس کا ایک اور ثبوت پیش کرتا چلوں۔ یہ شہر کراچی میں جماعت اسلامی کی بغل بچہ تنظیم پاسبان کی جانب سے رینجرز اور فوج کے خلاف کیئے گئے ایک مظاہرے کی فوٹیج ہے۔ آپ غور سے سنیں یہ کیا کہ رہے ہیں اور کیا کر رہے ہیں پھر مجھے بتائیں کہ اگر جماعت اسلامی اور پاسبان کا کوئی ہمدرد رینجرز کے ہاتھوں مارا جائے اس پر تو جماعت اسلامی اور ان مولویوں کو رینجرز فوج کے خلاف ہر طرح کی نعرے بازی کی اجازت ہو، نہ کوئی سراج الحق کے خلاف ایف آئی آر کٹوانے کی بات کرے، نہ کوئی الطاف شکور کے خلاف غداری کے مقدمے درج کروائے، لیکن اگر یہی کام ایم کیو ایم کر دے تو کراچی سے گلگت تک شور مچایا جائے، یہ کس عصبیت کا نتیجہ ہے ؟ کیوں ڈی جی رینجرز صاحب کیا کہیں گے آپ ؟ یہ دہرا معیار کیوں۔

149384_10205143629130145_7080638658031618928_n11175051_10205143629170146_7188848908244171132_n11221950_10205143629090144_3393907469111972587_n

شہر کراچی میں کالعدم دہشتگرد گروہ اہل سنت والجماعت (سابقہ کالعدم انجمن سپاہ صحابہ)، جماعت الدعوۃ اور دیگر تمام مذہبی انتہا پسند گروہوں کو کام کرنے کی پوری آزادی ہے۔ رینجرز کے چھاپے اور گرفتاریاں صرف ایم کیو ایم سے مخصوص ہیں۔ جماعت اسلامی کے مرکز ادارہ نور الحق سے لے کر جماعت الدعوۃ کے ہیڈ کوارٹر بمقام یونیورسٹی روڈ (جامعۃ الدراسات) تک اور کالعدم ASWJ کے مرکز بمقام ناگن چورنگی سے لے کر دہشتگردی کی نرسری جامعہ بنوریہ تک، دہشتگردی و انتہا پسندی کے کسی مرکز پر رینجرز اہلکاروں کی جانب سے چھاپہ مارنے کی جرات نہیں کی گئی پچھلے چار مہینوں میں۔ سانحہ پشاور سے لے کر سانحہ صفورا تک دہشتگردی کے ہر بڑے واقعہ میں ملوث ملزمان( جن کو سندھ پولیس نے گرفتار کیا) کا تعلق دہشتگردی کے انہی مراکز سے رہا جو رینجرز کی دسترس اور پہنچ سے دور ہیں۔

واضح ہوجاتا ہے کہ ان پے در پے چھاپوں اور گرفتاری کا مقصد کراچی شہر کی مہاجر آبادی اور مہاجر نوجوانوں کو ٹارگٹ اور ہراساں کرنا ہے اور یہ چھاپے اور گرفتاری سیاسی اور لسانی عصبیت کا پہلو رکھنے ہیں نہ کہ انتظامی اور قانونی۔

اور پھر یہ صرف سندھ کا مسلہ نہیں، بلوچستان میں بھی یہ تکفیری دہشتگرد ایف سی کی کسی بھی کاروائی سے محفوظ ہیں۔

اگر کسی کو میری بات کی سچائی پر شبہ ہے تو بتا دے کہ پچھلے 6 ماہ میں، سانحہ پشاور کے بعد سندھ رینجرز نے کالعدم دہشتگرد تکفیری گروہ اہل سنت والجماعت کے کتنے مدارس پر چھاپا مارا، کتنے دہشتگردوں کو گرفتار کیا، کتنے دہشتگردوں کی ویڈیو اور انٹیروگیشن رپورٹس شائع کیں؟

 

11698800_10205143895616807_8030931669644880022_o

 

کیا مضحکہ خیز دلیل دی گئی ہے 90 پر چھاپہ مارنے کی کہ جن لوگوں کو گرفتار کیا گیا وہ امن کے خلاف ہیٹ اسپیچ میں معاونت کیا کرتے تھے۔ جنرل بلال نے لگتا ہے کالعدم تکفیری دہشتگرد اہل سنت والجماعت کے جلسے جلوسوں کی تقریریں نہیں سنی۔ کافر کافر کے نعرے، قائد اعظم کے خلاف نعرے، قتال اور دہشتگردی کے نعرے لیکن کیا جنرل بلال اور ان کی رینجرز نے لدھیانوی، فاروقی اور مینگل کو گرفتار کرنے کی زحمت گوارا کی ؟
یہ کون سا لسانی تعصب ہے کہ ساری ہیٹ اسپیچ عزیز آباد میں نظر آتی ہے۔ گزشتہ 40 سال سے اسٹیبلیشمینٹ کے پالے ہوئے کالعدم دہشتگرد گروہ کراچی سے کوئٹہ تک ہیٹ اسپیچ کر رہے ہیں، کافر مرتد کے نعرے لگا رہے ہیں دہشتگردی کر رہے ہیں، لیکن نہ جنرل بلال ان تکفیری دہوبندی دہشتگردوں کے خلاف ایکشن لینے کی جرات کرتے ہیں اور نہ ہی بلوچستان میں FC اس کالعدم دہشتگرد گروہ کے خلاف کوئی اقدام کرنے کی جرات کر تی ہے۔ کیا جنرل بلال صاحب کی نظر میں اس ملک کے شیعہ سنی بریلوی مسلمانوں کا خون اتنا سستا ہے؟ کیا احمدی کمیونٹی، مسیحی برادری کے لوگوں کی جانے اتنی سستی ہیں کہ ان کے خلاف نہ صرف ہیٹ اسپیچ کی کھلی اجازت ہو بلکہ ان کے خون کے ساتھ بھی کھل کر ہولی کھیلی جائے اور رینجرز، ایف سی محض تماشائی بنی رہے ؟جنرل بلال صاحب جواب دیں کہ آپ نے شیعہ مسلمانوں، سنی بریلوی بھائیوں، احمدی کمیونٹی کے خلاف ہیٹ اسپیچ کرنے والے کتنے مراکز پر چھاپہ مارا ہے ؟ کتنی مساجد اور مدارس پر ریڈ کی ہے، کالعدم اہل سنت والجماعت کے کتنے دہشتگردوں کو آپ نے ہیٹ اسپیچ کے الزام کے تحت بند کیا ہے ؟ اگر ایک بھی نہیں تو پھر یہ دہرا معیار کیا بتا رہا ہے ؟جنرل بلال صاحب، آپ کی اطلاع کے لیئے عرض کر دوں کہ کچھ دن پہلے جس مفتی نعیم کے ساتھ آپ نے فوٹو سیشن کروایا ہے اس نے اپنی کتاب ادیان باطلہ اور صراط مستقیم میں پاکستان میں بسنے والے ہر دوسرے مکتب فکر بشمول شیعہ اثنا عشری، شیعہ اسماعیلی، بریلوی سنی، احمدی کمیونٹی کو کافر، مرتد، مشرک وغیرہ لکھا ہے۔ اگر آپ ہیٹ اسپیچ کے خلاف کاروائی میں مخلص ہوتے تو اس تکفیری دیوبندی مولوی کے ساتھ تصویریں نہ بنوا رہے ہوتے۔

باقی فوج اور رینجرز کے خلاف تقریر تو زرداری صاحب نے بھی کی تھی ابھی کچھ دن پہلے وہ کیا لو لیٹر لگ رہا تھا آپ کو ؟ اگر نہیں تو بلاول ہاؤس پر چھاپہ کیوں نہیں مارا ؟

 

Comments

comments