رسول الله (ص) کے مجزات کے منکر تکفیری دیوبندی اپنے دہشت گردوں کو ولی ثابت کرنے پر تل گیے – خالد نورانی

رسول الله (ص) کے مجزات کے منکر تکفیری دیوبندی اپنے دہشت گردوں کو ولی ثابت کرنے پر تل گیے – خالد نورانی

10923589_10205875548236228_6755620636536655325_n

دیوبندی تکفیری دہشت گرد تنظیم سپاہ صحابہ پاکستان کے دہشت گرد شبیر احمد جس کو گزشتہ دنوں تختہ دار پر لٹکایا گیا جس نے بے گناہ لوگوں کو قتل کیا تها ، اس کو مرگئے مردود نہ فاتحہ نہ درود والے دیوبندی تکفیری ، جو قبور اولیاء کو ڈائنا مائیٹ لگاکر اڑاتے ہیں ، استغاثہ و استمداد کے منکر ہیں ولی اللہ ثابت کرنے پر تل گئے ہیں اور یہ جهوٹا افسانہ گهڑا کہ اس کی قبر سے خوشبو آنا شروع ہوگئی ہے ،

حضور کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے میلاد کے منکر ، مدح رسول صلی اللہ علیہ وسلم پر جن کے سینے تنگ ہونے لگتے ہیں اپنے ایک دہشت گرد ، درندے قاتل کو ولی ثابت کرنے کے لئے زور لگارہے ہیں قرآن پاک میں اللہ پاک نے ارشاد فرمایا کہ جو کسی مسلمان کو عمدا قتل کرے اس کی جزا جہنم ہے جس میں وہ ہمیشہ رہے گا

اور کسی اسلامی ریاست میں کسی فرد کی جانب سے ہتهیار اٹهاکر قانون سے انحراف کرنا خارجیوں کا شیوہ رہا ہے جو ایسا کرتا ہے وہ مثل خوارج ہوتاہے ،ڈاکٹر شبیر بهی ایک خارجی تها اور رسول کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کہ خوارج دین سے ایسے نکل جائیں گے جیسے تیر کمان سے نکلتا ہے
اور آقائے دوجہاں ، سرور قلب و سینہ نے ان کو شریر ترین مخلوق سے تشبیہ دی تهی

حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ خلیفہ دوم کے صاحبزادے حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہ فرماتے تهے خوارج بدترین قوم ہیں جو آیات اللہ نے مشرکین کے حق میں نازل کیں یہ اس کا اطلاق مسلمانوں پر کرتے ہیں شبیر ، ریاض بسرا اور دیگر وہ دہشت گرد جن کو معصوم لوگوں کی جانیں لینے کی پاداش میں یا اسلامی ریاست کے اداروں پر حملہ کرنے اور قابل پهانسی جرائم کرنے کی وجہ سے پهانسی ہوئی وہ باغی ، خارجی ، شرپسند ، فسادی ہیں ایسے لوگوں کی قبریں جنت کا ٹکڑا نہیں جہنم کے گڑهوں میں سے ایک ہوتی ہیں اور خلق خدا کے خون سے هاته رنگنے والوں کی عاقبت کبهی سنورا نہیں کرتی