اداریہ : ہمدرد یونیورسٹی کے طالب علم کی خود سوزی کا افسوس ناک واقعہ

12963750_10206778962292452_74590412321101457_n

کوئی ہمدرد یونیورسٹی کی انتظامیہ کو بتاۓ کہ تعلیم انسان کا بنیادی حق ہے کسی ادارے کا احسان نہیں اور ماں باپ اپنے بچوں کو تعلیم حاصل کرنے کے لیۓ اسکول، کالج اور یونیورسٹی میں بھیجتے ہیں، قتل اور خود کشی کے لیۓ نہیں. محض فیس جمع نہ کرا سکنے یا لیٹ ہونے کی وجہ سے طالب علم کو امتحان میں شمولیت سے نہیں روکا جا سکتا. ہمدرد یونیورسٹی اور تمام نجی جامعات طالب علموں کو انسان سمجھیں، پیسہ کمانے کی مشین نہیں. عبد الباسط کے قتل کی ذمہ دار ہمدرد یونیورسٹی کی انتظامیہ اور وائس چانسلر ڈاکٹر عبد الحنان ہیں.

Comments

comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


*