اہلبیت رسول کے خلاف المانہ فصیح کی بد زبانی پر صدائے اہلسنت کا تبصرہ – خالد نورانی

11 12

المانہ فصیح ایک ہندوستانی نژاد کینڈا میں رہنے والی ایک عورت ہے جس کا دعوی ہے کہ وہ ایک سول سوسائٹی ایکٹوسٹ ہے اس نے 10جون 2015 ء کو اپنی وال پر کمنٹس دیتےہوئے حضرت علی کرم اللہ وجہہ الکریم اور جناب فاطمۃ الزھرا اللہ پاک ان دونوں سے راضی ہو کی شان میں انتہائی نازیبا اور گستاخ فقرے کہے اور مجھے میرے ایک دوست جو میرے کراچی یونیورسٹی میں ہم جماعت تھے نے ان کمنٹس کے سکرین شارٹ بھیجے تو میں نے ان موصوفہ کا حدوداربعہ معلوم کرنے کے لیے سرچ کی تو مجھے پتہ چلا کہ یہ خاتون پاکستان کے اندر اور پاکستان سے باہر پاکستان سےتعلق رکھنے والی نام نہاد لبرل اور این جی نائزڈ گروہ کے بڑے بڑے ناموں میں بہت مقبول ہیں

جیو ,جنگ گروپ میں امن کی آشا جوکہ بظاہر ہندوستانی فنڈڈ پروجیکٹ لگتا ہے کی روح رواں اور ایک سابق کمیونسٹ ڈی ایس ایف تنظیم کے بانی ڈاکڑ سرور کی بیٹی ہیں بینا سرور اس کی سب سے اہم دوست ہے اور زمانے کی نیرنگی دیکھئے کہ

باپ قوم کو روس کی جانب دھکیلتا تھا تو بیٹی لوگوں کو واشنگٹن کوقبلہ و کعبہ بنالینے کے لیے سرگرم ہے اور بھی کئی لوگ ہیں جو اس المانہ فصیح کے ساتھ ملکر کام کررہے ہیں اور ان میں کافی بڑی تعداد ان لوگوں کی ہے جو خود کو سادات کہتے ہیں اور اپنے پاس رسول کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی آل اور اھل بیت کے جملہ حقوق محفوظ کرنے کا دعوی بھی کرتے ہیں لیکن المانہ فصیح کی دریدہ دھنی پر ان کو کوئی ملال نظر نہیں آتا اور ان کے نزدیک این جی او پروجیکٹ , مارکیٹ میں یورپی یونین اور امریکہ کی خوشنودی زیادہ عزیز ہے اور یہ سارے کوفی شیعہ وہ ہیں جن کے اپنے دلوں میں اہلسنت سے بغض نکالے نہیں نکلتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ یہ لوگ ایک زبان ہوکر پاکستان میں دیوبندی تکفیری دہشت گردوں اور مڈل ایسٹ کے نام نہاد سلفی تکفیری دہشت گردوں کو سنی کہتے رہتے ہیں اور بضد ہیں کہ پاکستان میں شیعہ -سنی سول وار جیسی کیفیت دیکھنے کو ملے

نام نہاد سول سوسائٹی جس کی باگ دوڑ عاصمہ جہانگیر , نجم سیٹھی , شیری رحمان , بینا سرور , ماروی سرمد , اعجاز حیدر , محمد تقی , المانہ فصیح , سلمان حیدر , علی زیدی , اور اس طرح کے کئی اور لوگوں نے سنبھال رکھی ہے امریکہ اور یورپ کی خوشنودی کے لیے اور سعودی عرب کو راضی کرنے کے لیے اہلسنت بریلوی کو زبردستی دہشت گردوں کی صف میں کھڑے رکھنے پر مصر ہیں اور یہ دیوبندی تکفیری دہشت گرد تنظیموں کی شناخت سنّی بتلاتے ہیں اور ہر موقعہ پر یہ ثابت کرنے کی کوشش کرتے ہیں کہ سنّی دیوبندی کی طرح کے انتہاپسند , تکفیریوں کی طرح دہشت گردثابت ہوں گے اگر ان کو بھی امریکہ , سی آئی اے اور آئی ایس آئی اسلحہ و تربیت فراہم کردے یعنی صرف اپنے قیاس کے گھوڑےکو دوڑاکراہلسنت کو تکفیری دہھشت گردوں کے برابرکھڑا کرنے کے خواہاں ہیں اور ان کی اس انتہائی گمراہ کن اور بہتان پر مبنی تھیوری کو کوئی آگے بڑھائے تو دیکھتے ہی دیکھتے وہ ان کا محبوب ہوتا ہے اور پھر وہ کیسی ہی گستاخی کیوں نہ کرے , اسلام کی جس بھی شخصیت پر بہتان باندھے وہ ان کی ھیرو ہے

ہم اہلسنت کی عوام اور قیادت سے گزارش کرتے ہیں کہ وہ میڈیا اور سول سوسائٹی کے اندر سنیوں کو بدنام کرنے کا جو رجحان ہے اس کے خلاف احتجاج اور پرامن جلسے جلوس کا اہتمام کریں اور ہم سول سوسائٹی کی جانب سے آزادی اظہار کے نام پر اسلام اور مقدس ھستیوں پر کیچڑ اچھالنے والے گستاخوں اور ملعونوں کی حمائت سے دستبردار ہونے کا مطالبہ کرتے ہیں

اور ہم حکومت سے بھی اس معاملے کا فوری نوٹس لینے اور المانہ فصیح کو پاکستان میں کسی بھی میڈیا گروپ کی کسی ویب سائٹ یا بلاگ و آرٹیکل کو شایع کرنے سے روکنے کے احکام جاری کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں

کچھ لوگوں کو بہت تکلیف ہورہی ہے کہ المانہ فصیح کے خلاف اس قدر ردعمل کیوں آرھا ہے تو ہم اہلسنت بہت واضح اور دوٹوک لفظوں میں بتادینا چاہتےہیں کہ پاکستان میں آزادی اظہار کے حق کی آڑ میں ناموس رسالت , ناموس اصحاب رسول , ناموس اھل بیت اطہار کو پامال کرنے کی کوئی کوشش برداشت نہیں کی جائے گی اور جو ایسی کوشش کرے گا اسے پاکستانی آئین کے مطابق اور پاکستان پینل کوڈ کے مطابق سزا بھگتنا پڑے گی اور جو ایسے ملعون یا ملعونہ کی طرف داری کا مرتکب ہوگا اس سے بھی آئین و قانون پاکستان کے مطابق نمٹا جائے گا

Comments

comments