لشکر جھنگوی کے ترجمان متعصب صحافی فیض الله خان دیوبندی کی منافقت

 

12508970_10153823220254561_1765763187453214485_n

12509746_10153823184919561_3955569967547902628_n

متعصب صحافی فیض الله دیوبندی کی خواہش ہے کہ اسے بھی القاعدہ کے دہشت گردوں کی ہلاکت کا سوگ منانے کی آزادی دی جائے – کس نے روکا ہے حضور؟ یہاں تو اسامہ بن لادن جیسے تکفیری وہابی اور ملا عمر و ملک اسحاق جیسے تکفیری دیوبندی خوارج کی غائبانہ نماز جنازہ ہوتی ہے آپ بھی پڑھ لیں آلوش اور زرقاوی کا جنازہ

آپ کے ساتھ تکفیری خوارج کے دوسرے ہمنوا اوریا مقبول جان، جاوید چودھری، سبوخ سید اور رعایت الله فاروقی بھی ہوں گے، امامت کے لئے قاری حنیف ڈار (علی شیر حیدری کے مداح)، طاہر اشرفی (سعودی جاسوس) اور احمد لدھیانوی (دیوبندیوں کا سفیر امن) موجود ہیں

لگے رہو دیوبندی تکفیری بھائی، آپ کا یہی کام ہے کہ تکفیری دیوبندی و وہابی غلاظت کو سنی کے روپ میں پیش کیا جائے

یاد رہے کہ یہ دیوبندی خارجی، اسامہ بن لادن، زہران آلوش اور ملا عمر جیسے لعنتی خوارج کو اپنا رہنما اور آئیڈیل کہتا ہے اور طالبان، القاعدہ، سپاہ صحابہ کے تکفیری دیوبندی اور وہابی خوارج کو سنی کے لبادے میں پیش کرتا ہے

اس تکفیری دیوبندی خارجی مولوی کی چالاکی ملاحظہ کریں – یہ سنی، شیعہ، حنفی، مالکی، شافی اور صوفی حنبلی کے قاتل تکفیری وہابی اور دیوبندی خوارج کو سنی کے روپ میں پیش کر تا ہے اور سنی، شیعہ کے خلاف وہابی دیوبندی تکفیری دہشت گردی کو سنی شیعہ یا سعودی ایران جھگڑے کا روپ دیتا ہے

اس خبیث سے کوئی پوچھے – کیا داعش سنی تنظیم ہے یا تکفیری وہابی دیوبندی؟ کیا سعودی وہابی درندے اہلسنت کی نمائندگی کرتے ہیں؟ کیا پاکستان میں سپاہ صحابہ اور طالبان کے تکفیری دیوبندی خوارج نے ہزاروں سنی، شیعہ، شہریوں اور فوجیوں کو شہید نہیں کیا؟ کیا درباروں اور مزاروں، امامبارگاہوں، مساجد اور گرجا گھروں پر حملہ کرنے والے سنی ہیں یا وہابی دیوبندی؟

کیا جنت البقیع کا انہدام اور سعودی عرب میں ہزاروں سنی حنفی، مالکی اور دیگر علما کا قتل بھی ایران سعودی جنگ کا نتیجہ تھا

ہمار مطالبہ ہے کہ صحافی کے نام پر ان تکفیری دیوبندی خوارج میں سے فقط دس کو پکڑ کر پھانسی دی جائے جن میں طاہر اشرفی، لدھیانوی، فیض الله خان، سبوخ سید، رعایت اللہ فاروقی، سیف الله خالد، معاویہ اعظم طارق وغیرہ شامل ہیں، سب دہشت گردی بند ہو جائے گی

23

 

Comments

comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


*