علامہ طاہر اشرفی کی جانب سے شاتم رسول ملا عبدالعزیز دیوبندی کی شدید مذمت

d4211f5b46418c7351a57725009fcecd_L

طالبان کی جانب سے حکومت سے مذاکرات کے لئے بنائی گئی کمیٹی کے رکن مولانا عبدالعزیزدیوبندی نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں توہین رسالت (ص) کردی۔  طالبان سے مذاکرات کے عنوان نجی ٹی وی کے پروگرام میں میزبان مہر بخاری سے گفتگو کرتے ہوئے ملا عبدالعزیز دیوبندی نے کہا کہ قرآن و سنت آسمانی قانون ہے، آسمانی قانون نے ہوتے ہوئے ہمیں انسانوں کے بنائے ہوئے آئین کی ضرورت نہیں ہے،

دنیا کا کوئی بھی شخص خواہ وہ مسلمان ہی کیوں نہ ہو قانون نہیں بنا سکتا، حتیٰ کہ رسول اکرم (ص) کو یہ بھی اختیار حاصل نہیں ہے، آپ بھی دنیا میں کوئی قانون بنانے کا اختیار نہیں رکھتے تھے (نعوذبااللہ)۔ عبدالعزیز دیوبندی کی جانب سے توہین آمیز گفتگو کا جواب دیتے ہوئے علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ جو کچھ رسول اکرم (ص) نے فرما دیا خدا نے اس کو قانون بنادیا، وہ ہمارے لئے قانون بھی ہے اور حجت بھی ہے اس کو دنیا کی کوئی طاقت تبدیل نہیں کر سکتی۔

اس سے قبل سلفی اہلحدیث مسلک سے تعلق رکھنے والے شیخ الاسلام مولانا عبد القادر جالندھری نے بھی گستاخ رسول عبد العزیز دیوبندی کے قتل کا فتویٰ جاری کیا ہے اور حکومت سے اس کو سخت ترین سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے

http://lubpak.com/archives/304821

اسی قسم کی مطالبہ سنی بریلوی مسک کی طرف سے بھی کیا گیا ہے

http://lubpak.com/archives/304977

علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ ملا عبدالعزیز کو اپنے جملہ پر غور کرنا چاہیئے اور استغفار کرنا چاہیئے، رسول اکرم (ص) نے حدیث کے ذریعے قرآن کریم کی تشریع کی ہے، یہ صاحب آئین کو نہیں مانتے جبکہ خلفائے راشدین نے بھی ضابطہ بنائے، ضابطہ کو ہی تو آئین کہا جاتا ہے، مجھے سمجھ نہیں آرہا کہ یہ لوگ دن بہ دن کس طرف جا رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر ملا عبدالعزیز رسول اکرم (ص) کے قانون کو نہیں مانتے تو میں ملا عبدالعزیز کو نہیں مانتا، جو یہ کہے کہ میں نبی (ص) کو نہیں مانتا، میں اس شخص کو نہیں مانتا،

ملا عبدالعزیز ذرا یہ بتا دیں کہ یہ کس کے نمائندے ہیں، مولانا سمیع الحق، مفتی محمود سمیت کسی بھی بڑے عالم دین کو نہیں مانتے یہ لوگ کس کی نمائندگی کرتے ہیں، آج مولانا عبدالعزیز کہتے ہیں کہ وہ نبی (ص) کو بھی نہیں مانتے، میں زندہ رہوں یا رہوں کسی کو بھی یہ حق نہیں دے سکتا کہ کوئی بھی یہ کہے کہ وہ نبی (ص) کے قانون کو نہیں مانتا۔

 ملا عبدلعزیز دیوبندی کی باتوں سے علامہ طاہر اشرفی نے شدید اختلاف اختلاف کیا اور اس کی مذمت کی – علامہ طاہر اشرفی کی جانب سے دیوبندی تکفیری طالبان کی حمایت میں پاکستان کے قانون و  کے آئین ساتھ ساتھ شاتم رسول ملا عبدلعزیز دیوبندی کی مذمت سے یہ بات صاف ہو جاتی ہے کہ دیوبندی تکفیر طالبان کے حامی اور طالبان پاکستان میں تہنا ہیں اور ان کی سوچ کی پاکستان میں کوئی جگہ نہیں لیکن ان سب باتوں کے باوجود حکومت کی طرف سے مذاکرات کی بھیک مانگنا سمجھ سے بالا تر ہے –


Prophet Muhammad (PBUH) can’t Make Laws… by dm_522c09cf20d0a

NewsEye – 11th February 2014 by anidajorge

Comments

comments

Latest Comments
  1. GOWALMANIDA
    -