SOS from Damascus: Save the lives of Shia and Sunni Sufi Muslims living near Syeda Zainab’s shrine

The damage done to the shrine of Syeda Zainab (sa) by the so called 'Free Syrian Army' (Saudi-sponsored Wahhabi terrorists).

Related post: We condemn attack on the shrine of Prophet Muhammad’s granddaughter by Saudi sponsored terrorists

Adapted and edited from SRW

July 20, 2012

Washington DC – According to our sources in Sayedah Zainab, Syria, 10 kilometers outside Damascus, thousands of Shia and Sunni Sufi Muslims are in danger of massacre by the Free Syrian Army and groups affiliated with them. These also include many Shia and Sunni Sufi (Barelvi) Muslims from Pakistan, India, Iraq, Afghanistan and other countries who settled in Syria in last several hundred years. Shia Rights Watch has learned from many residents living in the area that the Free Syrian army has threatened to massacre all the Shia and Sufi Sunni Muslims in the area unless they flea.

Most of the Shiites living in the area are refugees from Iraq, Afghanistan, Pakistan, and other countries. The Shi’a community there flourished by building hospitals, schools, hotels, and shops. The Shi’as living in and around the area of Damascus have played no part in the ongoing violence that is occurring in Syria between the rebels and the government.

We call on the United Nations, the United States, and Members of the United Nations Security Council to immediately interfere to stop the imminent massacre of thousands of innocent Shi’a Muslims living around the holy shrine of the granddaughter of the Prophet Mohamed where a suicide bomber blew up an explosive laden car near the shrine weeks ago killing some and damaging the shrine itself.

The Free Syrian Amy and similar armed groups have previously stated their anti-Shi’a positions which led to the killing of dozens of Shi’a including 23 Iraqis killed in the past ten days and the beheadings of others. Several Shia scholars where killed including Syrian born Afghan Sayed Naser Alavi who was killed April 13, 2012 .

We specifically call on Turkey, Saudi Arabia, and Qatar to use their influence on the Free Syrian Army to stop the massacre of Shi’a and Sunni Sufi Muslims who have no involvement in the conflict between the Syrian government and the rebels. They have played no role in supporting either side.

We call on U.N. observers to travel to the area and prevent the Free Syrian Army and its affiliates from harming innocent Shi’a Muslims and their holy places.

We especially call on the international media and international community to immediately dispatch reporters to the region in order to prevent the ensuing tragedy by gaining international attention.

Threats of genocide have also come from outside Syria form people who fund the Free Syrian Army. A former member of the Kuwaiti Parliament Osama AlMunawer (Salafi Extremists) has promised to destroy the shrine of Sayedah Zainab, holding the remains of the granddaughter of Prophet Mohamed. AlMunawer made this statement on his twitter account July 18. The Kuwaiti government is responsible for AlMunawer’s statement as he holds its citizenship. The international community is requested to pressure Kuwait to hold such criminals to account.

We strongly condemn these terroristic actions against the Shi’a and moderate Sunni community in Syria and call for urgent action for the protection of these communities.

Mustafa Akhwand
Shia Rights Watch

1900 L Street NW Washington DC 20036
www.ShiaRightsWatch.org
Phone : 202-643-7442
Fax: 202-318-8555

——-

Tariq Ali on Russia Today: ‘Syrian rebels create mayhem to blame it on Assad regime’

Moscow says those behind the latest massacre in Syria want to unleash sectarian violence and ignite full civil war. Over two hundred people are believed to have been killed in the central province of Hama. Both government and rebel forces blame each other for the slaughter – while the UN remains paralysed on whether to extend its observer mission, or impose sanctions. Russia Today talks to author and Middle East expert Tariq Ali from London.

A Saudi TV to Syrian jihadis: “O descendants of Umayyads, leave no Shia relic in Syria; demolish Lady Zeinab’s “temple”pic.twitter.com/SCgy1PjJ

وہابی چینل: اے یزید کے پوتو اے معاویہ کے فرزندو! بنت علی (ع) کا حرم منہدم کرو
آل سعود سے وابستہ ایک وہابی ٹی وی چینل نے دہشت گردوں کو اکسانے اور مشتعل کرنے کی نیت سے، ان کی دہشت گردانہ کاروائیوں کی تعریف کرتے ہوئے ان دہشت گردوں کو یزید بن معاویہ اور معاویہ بن ابی سفیان کے “برحق پوتے اور نواسے” قرار دیا ہے اور ان کو ہدایت کی ہے کہ دمشق میں حضرت سیدہ زینب اور حضرت سیدہ رقیہ سلام اللہ علیہما کے مزارات کو منہدم کریں۔

اطلاعات کے مطابق پوری دنیا میں دہشت گردی کی قیادت کرنے والے خاندان آل سعود سے وابستہ اور آل سعود کی خفیہ ایجنسیوں کے زیر سرپرستی چلنے والے ایک وہابی ٹیلی ویژن چینل “الصفا” نے شام کے دہشت گرد ٹولوں کو ـ جو نام نہاد “سیرین فریڈم آرمی” کے نام سے دہشت گردی کی کاروائیوں میں مصروف ہیں ـ شام میں بنو امیہ کے پوتے قراد دیا ہے اور ان سے کہا ہے کہ دمشق میں حضرت سیدہ زینب اور حضرت سیدہ رقیہ سلام اللہ علیہما کے مزارات کو ویران کردیں۔

اس چینل نے ایک اشتعال انگیز اور فتنہ انگیز پیغام میں کہا ہے: اے معاویہ بن ابی سفیان کے پوتو اور نواسو! اور اے یزید بن معاویہ کے پوتو! اے آزاد فوج کے سپاہیو! تمہیں زینب (س) کے “معبد” کو منہدم کرنا چاہئے اور اس کی مانند تمام قبروں کو ویران کرنا چاہئے۔

واضح رہے کہ آل سعود کے اس وہابی چینل کے دفاتر ریاض، کویت اور قاہرہ میں واقع ہیں اور اس نے سیدہ کے مزار کو معبد یا عبادتگاہ سے تعبیر کیا ہے جس کا مقصد سمجھنے والے سمجھتے ہیں اور یہ بھی جانتے ہیں کہ وہابی دین استعمار کا پیدا کردہ ہے

امریکہ اور برطانیہ مسلمانوں کے مذہبی جذبات کو مشتعل اور شام میں مذہبی فتنے کھڑے کرکے شام میں خانہ جنگی شروع کروانے کے درپے ہیں جس کے لئے قطر اور سعودی عرب اپنی ہر قسم کی فکری، مالی اور فوجی خدمات پیش کررہے ہیں اور قطر و سعودی عرب نیز ترکی اسرائیل کی کمانڈ میں سب کچھ کررہے ہیں۔

امریکہ، برطانیہ، فرانس وہابی تکفیری ٹولوں کی مدد کررہے ہیں اور وہابی چینلز “صفا”، “وصال”، “الحق”، “الحکمہ”، “مکہ”، “ناس”، “بیان”، “الخلیجیہ”، “الرحمہ”، “الاوطان” آل سعود اور قطر کے تیل کے ڈالروں سے امت اسلامی میں تفرقہ ڈالنے کے حوالے سے مغربی استعمار کی خدمت کررہے ہيں جبکہ آل سعود کا نیوز چینل “العربیہ” اور قطر کا نیوز چینل “الجزیرہ” بھی جلتی پر تیل کا کام کررہے ہیں نیز اسرائیلی، سعودی، قطری، امریکی، برطانوی، فرانسیسی اور ترکی انٹیلی جنس ادارے ان چینلوں اور دیگر ذرائع سے شام میں فتنہ انگيزی کرکے اسرائیل کی ڈوبتی کشتی کو بچانے کی سعی باطل میں مصروف ہیں۔

آل سعود سے وابستہ تکفیری وہابیوں نے حال ہی میں حرم سیدہ زینب سلام اللہ علیہا پر خودکش حملہ کرنے کی کوشش کی تھی لیکن خودکش دہشت گرد گھبرا گیا تھا اور حرم سے کافی فاصلے پر اپنے آپ کے 500 کلوگرام دھماکہ خیز مواد کے ساتھ دھماکے سے اڑا دیا تھا۔

اس کے بعد تکفیریوں نے حرم کا محاصرہ کرلیا تھا جو شامی فوج کی فوری اور تیز رفتار کاروائی کے نتیجے میں محاصرہ توڑ دیا گیا اور آل سعود کی آنکھوں کے تاروں نے درجنوں لاشیں چھوڑ کر فرار کو کرار پر ترجیح دی تھی۔

زینبیہ کا علاقہ عام طور پر شیعوں کا مسکن ہے جنھوں نے ان ایام میں سیدہ کے حرم مطہر اور حوزہ علمیہ سیدہ زینب سلام اللہ علیہا میں پناہ لے رکھی ہے جبکہ اس علاقے میں مقیم سینکڑوں عراقیوں کو دھمکیاں موصول ہونے کے بعد، وہ عراق واپس جا چکے ہیں۔

اس سے قبل وہابیوں نے اپنے اصل عقیدے کو آشکار کرتے ہوئے شام میں دہشت گردی کی کاروائیوں کو ہوا دینے کی نیت سے یزید بن معاویہ اور شمر بن ذی الجوشن کے نام پر مسلح یونٹوں کی تشکیل کا بھی اعلان کیا ہے جو “حمد بن جاسم بن جبر یونٹوں” اور “عبداللہ و نائف بن عبدالعزيز یونٹوں” کے شانہ بشانہ اسرائیل مخالف محاذ مزاحمت کے خلاف لڑ رہے ہیں۔

http://abna.ir/data.asp?lang=6&id=330973

Mulla Hassan Almodhafar – Father Haidar

Father Haider, O Haider, Wish you were here, O Father

Latest Comments
  1. ahsan abbas
    Reply -
  2. Malik e Ashtar
    Reply -
  3. Ch. Azmat
    Reply -
  4. Ch. Azmat
    Reply -
  5. Saad
    Reply -
  6. Saad
    Reply -

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>

Current ye@r *